امریکا کی ایک بارپھر ایران کے ساتھ براہ راست مذاکرات کی درخواست

  Click to listen highlighted text! تہران : امریکا نے ایک بارپھر ایران کے ساتھ براہ راست مذاکرات کی درخواست کردی, ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے امریکی درخواست کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ امریکی بدستور براہ راست مذاکرات کا مطالبہ کرتے ہیں لیکن ہم نے اب تک براہ راست مذاکرت کیلئے حتمی فیصلہ نہیں کیا ہے۔انہوں نے ویانا مذاکرات کے حوالے سے کہا کہ ہم نے سینئر ماہرین، سیاسی ڈائریکٹر جنرل اور نائب وزراء کی سطح پر مذاکرات کا اہتمام کیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ اسی سطح پر عمل درآمد کے پروسس میں داخل ہوجائیں گے اور اعلیٰ سطح کے اجلاسوں کی ضرورت نہ رہے گی حسین امیر عبداللہیان نے کہا کہ ہم خارجہ تعلقات کے دائرے میں مشرق و مغرب کے ساتھ کام کر رہے ہیں تاہم ہماری آزاد خارجہ پالیسی بدستور جاری ہے اور ہم نہ شرقی نہ غربی کی پالیسی پر گامزن ہیں۔

تہران : امریکا نے ایک بارپھر ایران کے ساتھ براہ راست مذاکرات کی درخواست کردی, ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے امریکی درخواست کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ امریکی بدستور براہ راست مذاکرات کا مطالبہ کرتے ہیں لیکن ہم نے اب تک براہ راست مذاکرت کیلئے حتمی فیصلہ نہیں کیا ہے۔انہوں نے ویانا مذاکرات کے حوالے سے کہا کہ ہم نے سینئر ماہرین، سیاسی ڈائریکٹر جنرل اور نائب وزراء کی سطح پر مذاکرات کا اہتمام کیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ اسی سطح پر عمل درآمد کے پروسس میں داخل ہوجائیں گے اور اعلیٰ سطح کے اجلاسوں کی ضرورت نہ رہے گی حسین امیر عبداللہیان نے کہا کہ ہم خارجہ تعلقات کے دائرے میں مشرق و مغرب کے ساتھ کام کر رہے ہیں تاہم ہماری آزاد خارجہ پالیسی بدستور جاری ہے اور ہم نہ شرقی نہ غربی کی پالیسی پر گامزن ہیں۔