اربعین واک کرنے والوں کو مقدمات کی دھمکیاں دینا آئین سے انحراف ہے، علامہ ناصر عباس جعفری

اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے چیئرمین علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ چہلم امام حسین علیہ السلام پر جلوسوں اور مجالس میں عزاداران جس انداز میں بھی شریک ہوں اس پر کوئی پابندی قابل قبول نہیں۔ آئین پاکستان ہر شہری کو اپنے ملک میں آزادی کے ساتھ نقل و حمل کی ضمانت فراہم کرتا ہے، ایسے میں نامناسب احکامات جاری کرکے پیدل شرکت کرنے والے عزاداروں پر مقدمات کی دھمکیاں دینا آئین پاکستان سے انحراف ہے۔ عزاداری امام حسینؑ ہماری سرخ لکیر ہے اور اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔ دوسری جانب علامہ ناصر عباس کے حکم پر ایم ڈبلیو ایم کی مرکزی کابینہ نے سوشل میڈیا پر گردش کرتے سرکاری حکم نامے پر صوبائی وزارت داخلہ اور مرکزی حکومت سے روابط شروع کردیئے ہیں۔

  Click to listen highlighted text! اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے چیئرمین علامہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ چہلم امام حسین علیہ السلام پر جلوسوں اور مجالس میں عزاداران جس انداز میں بھی شریک ہوں اس پر کوئی پابندی قابل قبول نہیں۔ آئین پاکستان ہر شہری کو اپنے ملک میں آزادی کے ساتھ نقل و حمل کی ضمانت فراہم کرتا ہے، ایسے میں نامناسب احکامات جاری کرکے پیدل شرکت کرنے والے عزاداروں پر مقدمات کی دھمکیاں دینا آئین پاکستان سے انحراف ہے۔ عزاداری امام حسینؑ ہماری سرخ لکیر ہے اور اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔ دوسری جانب علامہ ناصر عباس کے حکم پر ایم ڈبلیو ایم کی مرکزی کابینہ نے سوشل میڈیا پر گردش کرتے سرکاری حکم نامے پر صوبائی وزارت داخلہ اور مرکزی حکومت سے روابط شروع کردیئے ہیں۔