تیل کی قیمتیں کم کرانے کے لیے امریکا، چین اور جاپان نے ہاتھ ملا لیا

  Click to listen highlighted text! واشنگٹن : عالمی سطح پرتیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کم کرنے کے لیے بڑی طاقتیں بھرپور طریقے سے متحرک ہو گئی ہیں۔ امریکا، چین، جاپان اور بھارت نے تیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کم کرنے کے لیے فوری طور پر تیل و گیس کے ریزرو ذخائر جاری کرنے کے احکامات جاری کردیے ہیں۔ فیصلہ اس لئے کیا گیاہے کہ قیمتیں کم کرانے کے لیے اوپیک پر 2 دسمبر کی میٹنگ میں دباؤ ڈالا جائے گا۔ اور اسے پیدوار بڑھانے پر مجبور کیا جائے ۔ اوپیک پلس گروپ نے فیصلے کو غلط قرار دیا ہے۔ اوپیک پلس گروپ میں سعودی عرب سمیت خلیج میں امریکا کے دوسرے اتحادی ممالک اور روس بھی شامل ہیں، اس گروپ نے تیل کی ماہانہ پیداوار بڑھانے کی درخواستیں مسترد کردی تھیں۔ امریکا نے اعلان کیا کہ وہ اپنے اسٹریٹجک ذخائر میں سے 5 کروڑ بیرل تیل جاری کرے گا۔ بھارت کاکہنا ہےکہ وہ50 لاکھ بیرل تیل جاری کرےگا،برطانیہ نے رضاکارانہ طور پر ایک کروڑ 50 لاکھ بیرل تیل جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔

واشنگٹن : عالمی سطح پرتیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کم کرنے کے لیے بڑی طاقتیں بھرپور طریقے سے متحرک ہو گئی ہیں۔ امریکا، چین، جاپان اور بھارت نے تیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کو کم کرنے کے لیے فوری طور پر تیل و گیس کے ریزرو ذخائر جاری کرنے کے احکامات جاری کردیے ہیں۔ فیصلہ اس لئے کیا گیاہے کہ قیمتیں کم کرانے کے لیے اوپیک پر 2 دسمبر کی میٹنگ میں دباؤ ڈالا جائے گا۔ اور اسے پیدوار بڑھانے پر مجبور کیا جائے ۔ اوپیک پلس گروپ نے فیصلے کو غلط قرار دیا ہے۔ اوپیک پلس گروپ میں سعودی عرب سمیت خلیج میں امریکا کے دوسرے اتحادی ممالک اور روس بھی شامل ہیں، اس گروپ نے تیل کی ماہانہ پیداوار بڑھانے کی درخواستیں مسترد کردی تھیں۔ امریکا نے اعلان کیا کہ وہ اپنے اسٹریٹجک ذخائر میں سے 5 کروڑ بیرل تیل جاری کرے گا۔ بھارت کاکہنا ہےکہ وہ50 لاکھ بیرل تیل جاری کرےگا،برطانیہ نے رضاکارانہ طور پر ایک کروڑ 50 لاکھ بیرل تیل جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔