ایران میں سیٹلائیٹ کیئریر راکٹ ذوالجناح کا دوسرا کامیاب تجربہ

  Click to listen highlighted text! تہران : ایرانی ماہرین نے اندرون ملک تیار کیے گئے سیٹلائیٹ کیئریر راکٹ ذوالجناح کا دوسرا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ تحقیقاتی مقاصد کے لیے تیار کیے گئے راکٹ ذوالجناح کے تجربے کا مقصد، اس کی کارکردگی کا جائزہ لینا ہے۔ جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس ذوالجناح تکنیکی لحاظ سے دنیا بھر کے ایسے دیگر راکٹوں کا ہم پلہ ہے۔ یہ راکٹ پہلے دو مرحلوں میں جامد ایندھن استعمال کرتا ہے جبکہ تیسرے مرحلے میں مائع ایندھن سے کام لیتا ہے۔ ذوالجناح 220 کلو تک وزن زمین کے مدار میں 500 کلومیٹر کی بلندی پر پہنچانے کے قابل ہے۔

تہران : ایرانی ماہرین نے اندرون ملک تیار کیے گئے سیٹلائیٹ کیئریر راکٹ ذوالجناح کا دوسرا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ تحقیقاتی مقاصد کے لیے تیار کیے گئے راکٹ ذوالجناح کے تجربے کا مقصد، اس کی کارکردگی کا جائزہ لینا ہے۔ جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس ذوالجناح تکنیکی لحاظ سے دنیا بھر کے ایسے دیگر راکٹوں کا ہم پلہ ہے۔ یہ راکٹ پہلے دو مرحلوں میں جامد ایندھن استعمال کرتا ہے جبکہ تیسرے مرحلے میں مائع ایندھن سے کام لیتا ہے۔ ذوالجناح 220 کلو تک وزن زمین کے مدار میں 500 کلومیٹر کی بلندی پر پہنچانے کے قابل ہے۔