شام کے صدر بشار السد ماسکو پہنچ گئے، روسی صدر سے ملاقات

  Click to listen highlighted text! ماسکو: شام کے صدر بشار السد ماسکو پہنچ گئے ہیں، جہاں روس کے صدر ولادیمیر پوتین نے ان کا والہانہ استقبال کرتے ہوئے کہا ہے کہ شام کے صدر کو شامی عوام کا اعتماد حاصل ہے اس ملاقات کے دوران شام کے صدر نے اپنے ملک کے خلاف لگائی گئی پابندیوں کو غیر قانونی و غیر انسانی قرار دیا اسکے علاوہ انہوں نے دہشت گردی کے خلاف کامیابی میں شام اور روس کی افواج کی کارکردگی کو بڑی کامیابی سے تعبیر کیا شام کے صدر نے بھی اس ملاقات میں کہا کہ شام اور روس کو عالمی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بہت بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ ہم نے دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے کے ساتھ دہشت گردی سے متاثرہ علاقوں میں متاثرہ لوگوں کو دوبارہ آباد کرنے میں بھی نمایاں کام انجام دیا ہے شام کے صدر نے کہا کہ روس اور شام نے دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں اہم کردار ادا کیا ہے اور اس سلسلے میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون کا سلسلہ جاری رہےگا بشار اسد نے کہا کہ دہشت گرد کی کوئی سرحد نہیں ہوتی بلکہ وہ پوری دنیا میں سرایت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کچھ ملکوں نے شام کے خلاف ایسی پابندیاں لگائی ہیں جو غیر انسانی ہیں۔ انہوں کہا کہ روسی قوم کا شام کی انسانی مدد کرنے پر شکرگزار ہوں۔

ماسکو: شام کے صدر بشار السد ماسکو پہنچ گئے ہیں، جہاں روس کے صدر ولادیمیر پوتین نے ان کا والہانہ استقبال کرتے ہوئے کہا ہے کہ شام کے صدر کو شامی عوام کا اعتماد حاصل ہے اس ملاقات کے دوران شام کے صدر نے اپنے ملک کے خلاف لگائی گئی پابندیوں کو غیر قانونی و غیر انسانی قرار دیا اسکے علاوہ انہوں نے دہشت گردی کے خلاف کامیابی میں شام اور روس کی افواج کی کارکردگی کو بڑی کامیابی سے تعبیر کیا شام کے صدر نے بھی اس ملاقات میں کہا کہ شام اور روس کو عالمی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بہت بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔ ہم نے دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے کے ساتھ دہشت گردی سے متاثرہ علاقوں میں متاثرہ لوگوں کو دوبارہ آباد کرنے میں بھی نمایاں کام انجام دیا ہے شام کے صدر نے کہا کہ روس اور شام نے دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں اہم کردار ادا کیا ہے اور اس سلسلے میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون کا سلسلہ جاری رہےگا بشار اسد نے کہا کہ دہشت گرد کی کوئی سرحد نہیں ہوتی بلکہ وہ پوری دنیا میں سرایت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کچھ ملکوں نے شام کے خلاف ایسی پابندیاں لگائی ہیں جو غیر انسانی ہیں۔ انہوں کہا کہ روسی قوم کا شام کی انسانی مدد کرنے پر شکرگزار ہوں۔