یورپ اور آسٹریلیا میں ہزاروں افراد کا کورونا پابندیوں کے خلاف احتجاج

  Click to listen highlighted text! برسلز: یورپ اور آسٹریلیا میں ہزاروں افراد کورونا پابندیوں کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے اور احتجاج کیا۔ نیدر لینڈ کے شہر روٹرڈیم میں دوسرے دن بھی ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے اور کورونا پابندیوں کے خلاف احتجاج کیا۔ پولیس اورمظاہرین میں جھڑپیں بھی ہوئیں۔ احتجاج کا دائرہ دی ہیگ اور ایمسٹرڈیم شہروں تک پھیل گیا ہے۔آسٹریا کے شہر ویانا میں 40 ہزار سے زائد افراد نے ریلی نکالی اور پابندیوں کو آمریت قرار دیتے ہوئے اس ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔ بیلجیئم کی سرحد کی قریب جنوبی شہر بریڈا میں سیکڑوں افراد نے مارچ کیا۔ کروشیا کے دارلحکومت زغرب میں بھی احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ آسٹریلیا میں کورونا ویکسین لازمی قرار دینے کے خلاف ہزاروں شہری سڑکوں پر نکل آئے۔ سڈنی، برسبین اور پرتھ میں بڑی بڑی ریلیاں نکالی گئیں۔

برسلز: یورپ اور آسٹریلیا میں ہزاروں افراد کورونا پابندیوں کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے اور احتجاج کیا۔ نیدر لینڈ کے شہر روٹرڈیم میں دوسرے دن بھی ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے اور کورونا پابندیوں کے خلاف احتجاج کیا۔ پولیس اورمظاہرین میں جھڑپیں بھی ہوئیں۔ احتجاج کا دائرہ دی ہیگ اور ایمسٹرڈیم شہروں تک پھیل گیا ہے۔آسٹریا کے شہر ویانا میں 40 ہزار سے زائد افراد نے ریلی نکالی اور پابندیوں کو آمریت قرار دیتے ہوئے اس ختم کرنے کا مطالبہ کیا۔ بیلجیئم کی سرحد کی قریب جنوبی شہر بریڈا میں سیکڑوں افراد نے مارچ کیا۔ کروشیا کے دارلحکومت زغرب میں بھی احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ آسٹریلیا میں کورونا ویکسین لازمی قرار دینے کے خلاف ہزاروں شہری سڑکوں پر نکل آئے۔ سڈنی، برسبین اور پرتھ میں بڑی بڑی ریلیاں نکالی گئیں۔