Wed Feb 21, 2024

اسرائیل کے فضائی حملے، خواتین و بچوں سمیت مزید 80 فلسطینی شہید برازیل نے اسرائیل سے اپنا سفیر واپس بلالیا حزب اللہ نے اسرائیل کے اندر تک سرنگیں بنا رکھی ہیں، فرانسیسی اخبار شہباز شریف وزیراعظم، زرداری صدر، حکومت سازی کا معاہدہ ہوگیا امریکا نے غزہ میں جنگ بندی کی تیسری قرارداد بھی ویٹو کردی سپاہ پاسداران انقلاب کے بری دستوں میں خودکش ڈرونز شامل اسرائیل فلسطینی قیدی خواتین کو بانجھ بنارہا ہے، اقوام متحدہ یمنی فوج کے دشمن کے جہازوں پر حملے، برطانوی جہاز ڈوب گیا خطے میں مزاحمت کی فکری بنیادیں واقعہ کربلا سے جنم لیتی ہیں، صیہونی اخبار یمن نے امریکا اور برطانیہ کو دشمن ملک قرار دے دیا طالبان نے دوحہ مذاکرات کیلئے ناقابل قبول شرائط رکھیں، گوتریس صیہونی فوج کے حملے جاری، مزید 107 فلسطینی شہید، 145 زخمی غزہ جنگ نے اسرائیلی معیشت تباہ کردی، آخری سہ ماہی میں 19.4 فیصد گراوٹ غزہ میں بھوک سے روزانہ درجنوں اموات ہو رہی ہیں، اقوام متحدہ ماہ رمضان میں مسجد اقصیٰ میں فلسطینیوں کا داخلہ محدود کرنے کا فیصلہ

روزانہ کی خبریں

عمران خان کا 23 دسمبر کو پنجاب اور خیبر پختونخوا اسمبلیاں توڑنے کا اعلان

لاہور: پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے تئیس دسمبر کو پنجاب اور خیبر پختونخوا اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کردیا۔ عمران خان نے دونوں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ چوہدری پرویز الہٰی اور محمود خان کے ہمراہ ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے اسمبلیاں توڑنے کا اعلان کیا۔ عمران خان نے کہاکہ اگر موجودہ حکومت نے معیشت بہتر طور پر چلائی ہوتی توہم کہتے کہ یہ مدت پوری کرلیں لیکن یہ ڈیفالٹ کی طرف جا رہے ہیں، ڈر ہے کہ اکتوبر میں بھی یہ الیکشن نہیں کرائيں گے۔ کیوں کہ انہيں پتہ ہے کہ جب بھی الیکشن ہوں گے یہ ہار جائيں گے۔ الیکشن کمشنر بد دیانت آدمی ہے جو ان کے ساتھ ملا ہوا ہے۔ قومی اسمبلی میں اسپیکر کے سامنے جاکر کہيں گے استعفیٰ قبول کرو۔ پی ٹی آئی چیئرمین نے پھر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ چلتی ہوئی اچھی بھلی حکومت کو بیرونی سازش سے ہٹانے کے پيچھے صرف ایک آدمی (ر)جنرل باجوہ ہے۔ حکومت گرنے پر عوام ہمارے ساتھ کھڑے ہوگئے، عوام کے ہمارے ساتھ کھڑے ہونے پر باجوہ کو غلطی مان لینی چاہیے تھی وہ عقل کُل تو نہيں تھے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کو این آراو ٹو جنرل (ر) باجوہ نے دیا۔
وفاقی وزیر برائے مںصوبہ بندی احسن اقبال نے کہا ہے کہ اسمبلیاں تحلیل کرنے کے اعلان کو خوش آمدید کہتے ہیں اور اس پر ملک بھر میں یوم تشکر منائیں گے۔ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا کہ اسمبلیاں تحلیل ہونے کے بعد آئین و قانون کے مطابق کارروائی ہوگی اور 90 دن میں الیکشن ہوتے ہیں تو ہم بہتر پوزیشن میں ہوں گے۔

مزید پڑھیے

Most Popular