یوکرین جنگ کیلئے اضافی فوجیوں کی طلبی، روس میں مظاہرے پھوٹ پڑے

ماسکو: یوکرین جنگ کیلئے ہزاروں اضافی فوجی طلب کرنے کے فیصلے کیخلاف روس میں مظاہرے پھوٹ پڑے۔ یکاترین برگ سمیت کئی شہروں میں ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے اور پیوٹن حکومت کے فیصلے کیخلاف احتجاج کیا۔ پولیس سے جھڑپوں میں کئی افراد زخمی ہوئے جبکہ درجنوں کو گرفتار کرلیا گیا۔ ادھر یوکرین کے صدر نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ روس کو یوکرین پر حملے کے لیے سزا دی جائے جس میں جرمانے اور سلامتی کونسل میں ویٹو پاور کو ختم کرنا بھی شامل ہے۔ ادھر یورپی یونین کے وزرائے خارجہ نے ہنگامی اجلاس میں روس پر نئی پابندیاں عائد کرنے پر غور کیا۔

  Click to listen highlighted text! ماسکو: یوکرین جنگ کیلئے ہزاروں اضافی فوجی طلب کرنے کے فیصلے کیخلاف روس میں مظاہرے پھوٹ پڑے۔ یکاترین برگ سمیت کئی شہروں میں ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے اور پیوٹن حکومت کے فیصلے کیخلاف احتجاج کیا۔ پولیس سے جھڑپوں میں کئی افراد زخمی ہوئے جبکہ درجنوں کو گرفتار کرلیا گیا۔ ادھر یوکرین کے صدر نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ روس کو یوکرین پر حملے کے لیے سزا دی جائے جس میں جرمانے اور سلامتی کونسل میں ویٹو پاور کو ختم کرنا بھی شامل ہے۔ ادھر یورپی یونین کے وزرائے خارجہ نے ہنگامی اجلاس میں روس پر نئی پابندیاں عائد کرنے پر غور کیا۔