وزیرستان ہو یا بلوچستان سب سے بات چیت کر کے مسائل حل کریں گے، وزیراعظم

  Click to listen highlighted text! میانوالی : وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی حکومت ملک کے مسائل کے حل کے لیے ہر کسی سے بات چیت اور مذاکرات کے لیے تیار ہے تاہم عوام کا پیسہ کرپشن کے ذریعے چوری کر کے باہر لے جانے والوں سے مفاہمت نہیں ہوگی۔ میانوالی میں ترقیاتی منصوبوں کے افتتاح اور سنگِ بنیاد رکھنے کے بعد عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا وہ اس ملک کو وہاں لے جائیں گے جس کے لیے یہ بنا تھا۔ کوئی طاقت اس ملک کو عظیم طاقت بننے سے نہیں روک سکتی۔ لیفٹ ہو یا رائٹ سب سے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔ وزیرستان ہو بلوچستان سب سے بات کر کے مسئلے حل کریں گے۔ لیکن جنہوں نے پاکستان کے عوام کا پیسہ چوری کیا اور باہر لے کر گئے ان سے مفاہمت نہیں کریں گے۔ عمران خان کے مطابق دنیا کے ہر خوشحال ملک میں قانون کی بالادستی جبکہ غریب ملکوں میں کرپشن کرنے والوں کے لیے دوہرا معیار ہے۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کے جو علاقے ترقی میں پیچھے رہ گئے ان کو اپنی حکومت کے پانچ سال کے دوران زیادہ ترقی دیں گے۔ قبائلی علاقے، میانوالی، بھکر، راجن پور اور بلوچستان کے علاقے بہت پیچھے رہ گئے۔ پوری کوشش ہے کہ ملک کے وہ تمام علاقے جو پیچھے رہ گئے پسماندہ ہیں ان کو سب سے زیادہ ترقی دیں۔

میانوالی : وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی حکومت ملک کے مسائل کے حل کے لیے ہر کسی سے بات چیت اور مذاکرات کے لیے تیار ہے تاہم عوام کا پیسہ کرپشن کے ذریعے چوری کر کے باہر لے جانے والوں سے مفاہمت نہیں ہوگی۔ میانوالی میں ترقیاتی منصوبوں کے افتتاح اور سنگِ بنیاد رکھنے کے بعد عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا وہ اس ملک کو وہاں لے جائیں گے جس کے لیے یہ بنا تھا۔ کوئی طاقت اس ملک کو عظیم طاقت بننے سے نہیں روک سکتی۔ لیفٹ ہو یا رائٹ سب سے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔ وزیرستان ہو بلوچستان سب سے بات کر کے مسئلے حل کریں گے۔ لیکن جنہوں نے پاکستان کے عوام کا پیسہ چوری کیا اور باہر لے کر گئے ان سے مفاہمت نہیں کریں گے۔ عمران خان کے مطابق دنیا کے ہر خوشحال ملک میں قانون کی بالادستی جبکہ غریب ملکوں میں کرپشن کرنے والوں کے لیے دوہرا معیار ہے۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان کے جو علاقے ترقی میں پیچھے رہ گئے ان کو اپنی حکومت کے پانچ سال کے دوران زیادہ ترقی دیں گے۔ قبائلی علاقے، میانوالی، بھکر، راجن پور اور بلوچستان کے علاقے بہت پیچھے رہ گئے۔ پوری کوشش ہے کہ ملک کے وہ تمام علاقے جو پیچھے رہ گئے پسماندہ ہیں ان کو سب سے زیادہ ترقی دیں۔