افغانستان سے فرار امریکی تربیت یافتہ کمانڈوز یوکرین میں روس سے لڑ رہے ہیں، کچھ داعش میں بھی شامل

کیف : امریکا نے اپنے تریبت یافتہ بھگوڑے افغانی ایس ایس جی کمانڈوز کو یوکرین میں روس کیخلاف جنگ میں اتار دیا۔ جبکہ بڑی تعداد کو شام اور عراق میں داعش میں شامل کردیا ہے۔ افغانستان کے بارے میں خصوصی روسی نمائندے ضمیر کابلوف کے مطابق افغانستان میں طالبان کے کنٹرول سے پہلے امریکا کے تربیت یافتہ اسپیشل سروسز کمانڈوز یوکرین میں موجود ہیں جو قوم پرست جنگجوؤں کے ساتھ مل کر روس کے خلاف لڑ رہے ہیں اور یہ احتمال بھی موجود ہے کہ افغانستان کے جو ہیلی کاپٹر طالبان کنٹرول کے دوران تاجکستان اور ازبکستان منتقل ہوئے تھے، وہ کیف کی تحویل میں دے دئیے جائیں۔ کابلوف نے مزید بتایا کہ ان اسپیشل کمانڈوز کا ایک حصہ عراق اور شام میں داعش کے ساتھ مل گیا ہے اور کچھ دیگر پیسے کے لئے نازی یوکرینیوں کے جنگی دستوں میں شمولیت اختیار کر چکے ہیں۔ سابقہ افغان حکومت دور کے ایک لاکھ دس ہزار اسپیشل سروسز سے وابستہ فوجی افغانستان سے بھاگے ہیں اور وہ امریکا میں داخلے کے منتظر ہیں لیکن ابھی تک انہیں داخلے کی اجازت نہیں دی گئی ہے ۔

  Click to listen highlighted text! کیف : امریکا نے اپنے تریبت یافتہ بھگوڑے افغانی ایس ایس جی کمانڈوز کو یوکرین میں روس کیخلاف جنگ میں اتار دیا۔ جبکہ بڑی تعداد کو شام اور عراق میں داعش میں شامل کردیا ہے۔ افغانستان کے بارے میں خصوصی روسی نمائندے ضمیر کابلوف کے مطابق افغانستان میں طالبان کے کنٹرول سے پہلے امریکا کے تربیت یافتہ اسپیشل سروسز کمانڈوز یوکرین میں موجود ہیں جو قوم پرست جنگجوؤں کے ساتھ مل کر روس کے خلاف لڑ رہے ہیں اور یہ احتمال بھی موجود ہے کہ افغانستان کے جو ہیلی کاپٹر طالبان کنٹرول کے دوران تاجکستان اور ازبکستان منتقل ہوئے تھے، وہ کیف کی تحویل میں دے دئیے جائیں۔ کابلوف نے مزید بتایا کہ ان اسپیشل کمانڈوز کا ایک حصہ عراق اور شام میں داعش کے ساتھ مل گیا ہے اور کچھ دیگر پیسے کے لئے نازی یوکرینیوں کے جنگی دستوں میں شمولیت اختیار کر چکے ہیں۔ سابقہ افغان حکومت دور کے ایک لاکھ دس ہزار اسپیشل سروسز سے وابستہ فوجی افغانستان سے بھاگے ہیں اور وہ امریکا میں داخلے کے منتظر ہیں لیکن ابھی تک انہیں داخلے کی اجازت نہیں دی گئی ہے ۔