علامہ ناصر عباس جعفری مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے چئیرمن منتخب

  Click to listen highlighted text! اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا اسلام آباد میں منعقدہ تین روزہ راہیان کربلا کنونشن مرکزی سربراہ کے اعلان کے ساتھ اختتام پذیر ہوگیا، کنونشن کے تیسرے روز خفیہ رائے شماری کے ذریعے اراکین شوریٰ عمومی نے اکثریت رائے سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کو جماعت کا سربراہ منتخب کرلیا۔ نومنتخب چیئرمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے شوریٰ عالی کے سربراہ علامہ شیخ حسن صلاح الدین نے حلف لیا۔ شوریٰ عالی کی جانب سے شوریٰ مرکزی کے سامنے جماعت کے سربراہ کے لیے تین نام پیش کئے گئے، جن میں علامہ سید احمد اقبال رضوی، علامہ سید باقر زیدی اور علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے نام شامل تھے۔ شوریٰ مرکزی نے اکثریت رائے سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کو چوتھی بار ایم ڈبلیو ایم کا سربراہ منتخب کیا۔ اس سے پہلے کنونشن کے دوسرے روز دستور میں ترمیم کی گئی، جس کے تحت جماعت میں سیکریٹری جنرل کی بجائے چیئرمین اور وائس چیئرمین کے عہدے اور صوبائی سطح پر صدر و نائب صدور کے عہدوں کی منظوری دی گئی۔

اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین پاکستان کا اسلام آباد میں منعقدہ تین روزہ راہیان کربلا کنونشن مرکزی سربراہ کے اعلان کے ساتھ اختتام پذیر ہوگیا، کنونشن کے تیسرے روز خفیہ رائے شماری کے ذریعے اراکین شوریٰ عمومی نے اکثریت رائے سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کو جماعت کا سربراہ منتخب کرلیا۔ نومنتخب چیئرمین علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے شوریٰ عالی کے سربراہ علامہ شیخ حسن صلاح الدین نے حلف لیا۔ شوریٰ عالی کی جانب سے شوریٰ مرکزی کے سامنے جماعت کے سربراہ کے لیے تین نام پیش کئے گئے، جن میں علامہ سید احمد اقبال رضوی، علامہ سید باقر زیدی اور علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے نام شامل تھے۔ شوریٰ مرکزی نے اکثریت رائے سے علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کو چوتھی بار ایم ڈبلیو ایم کا سربراہ منتخب کیا۔ اس سے پہلے کنونشن کے دوسرے روز دستور میں ترمیم کی گئی، جس کے تحت جماعت میں سیکریٹری جنرل کی بجائے چیئرمین اور وائس چیئرمین کے عہدے اور صوبائی سطح پر صدر و نائب صدور کے عہدوں کی منظوری دی گئی۔