زائرین کا جبری قرنطینہ ختم نہ کیا گیا تو ایئرپورٹس کارخ کریں گے، ایم ڈبلیو ایم

  Click to listen highlighted text! اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین نے عراق سے واپس آنےوالے زائرین کا24 گھنٹے کا جبری قرنطینہ ختم نہ کرنے پر ایئرپورٹس کے گھیراؤ کی دھمکی دیدی ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصر عباس شیرازی نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ زائرین کو قرنطینہ کے نام پر ہراساں کیا جا رہا ہے، ہم اس کی مذمت کرتے ہیں حکومت زائرین کربلا کے لئے مشکلات پیدا نہ کرے عزاداری ہماری عبادت ہے، اپنے آئینی اور قانونی حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے اگر 24 گھنٹے کے بلاجواز قرنطینہ کو ختم نہ کیا گیا تو ملک بھر سے عزادار زائرین کا استقبال کرنے ائیرپورٹس کا رُخ کریں گے انہوں نے اربعین پر عزاداروں کے خلاف مقدمات درج کرنے کی مذمت کی اور کہاکہ عزاداری ہماری عبادت ہے، اربعین پر حکومت کی طرف سے عزاداری کے جلوسوں میں رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش کی گئی مختلف صوبوں میں عزاداروں پر جھوٹی اور بے بنیاد ایف آئی آرز کاٹی گئیں۔ غیر آئینی اور غیر قانونی ہھتکنڈوں کے ذریعے مذہبی امتیازی سلوک برتا جا رہا ہے یہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے انہوں نے مقدمات واپس لینے کامطالبہ کیا انہوں نے مزید کہا کہ بہاولنگر میں عاشورہ دھماکے کے لواحقین کو شہداء کا چہلم منانے سے انتظامیہ روک رہی ہے، انتظامیہ اور پولیس کے اس غیر قانونی اور غیر اخلاقی طرز عمل کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ ہم آئین اور قانون کے مطابق احتجاج کا حق محفوظ رکھتے ہیں، ہمارا مطالبہ ہے کہ شہداء کا چہلم منانے پر عائد پابندی کو ہٹایا جائے۔

اسلام آباد : مجلس وحدت مسلمین نے عراق سے واپس آنےوالے زائرین کا24 گھنٹے کا جبری قرنطینہ ختم نہ کرنے پر ایئرپورٹس کے گھیراؤ کی دھمکی دیدی ایم ڈبلیوایم کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل سید ناصر عباس شیرازی نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ زائرین کو قرنطینہ کے نام پر ہراساں کیا جا رہا ہے، ہم اس کی مذمت کرتے ہیں حکومت زائرین کربلا کے لئے مشکلات پیدا نہ کرے عزاداری ہماری عبادت ہے، اپنے آئینی اور قانونی حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے اگر 24 گھنٹے کے بلاجواز قرنطینہ کو ختم نہ کیا گیا تو ملک بھر سے عزادار زائرین کا استقبال کرنے ائیرپورٹس کا رُخ کریں گے انہوں نے اربعین پر عزاداروں کے خلاف مقدمات درج کرنے کی مذمت کی اور کہاکہ عزاداری ہماری عبادت ہے، اربعین پر حکومت کی طرف سے عزاداری کے جلوسوں میں رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش کی گئی مختلف صوبوں میں عزاداروں پر جھوٹی اور بے بنیاد ایف آئی آرز کاٹی گئیں۔ غیر آئینی اور غیر قانونی ہھتکنڈوں کے ذریعے مذہبی امتیازی سلوک برتا جا رہا ہے یہ بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے انہوں نے مقدمات واپس لینے کامطالبہ کیا انہوں نے مزید کہا کہ بہاولنگر میں عاشورہ دھماکے کے لواحقین کو شہداء کا چہلم منانے سے انتظامیہ روک رہی ہے، انتظامیہ اور پولیس کے اس غیر قانونی اور غیر اخلاقی طرز عمل کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ ہم آئین اور قانون کے مطابق احتجاج کا حق محفوظ رکھتے ہیں، ہمارا مطالبہ ہے کہ شہداء کا چہلم منانے پر عائد پابندی کو ہٹایا جائے۔